ایل پی جی گیس سے لوڈ جہاز گوادر پورٹ پر لنگر انداز:رپورٹ سلیمان ہاشم

صحار مسقط سلطنت آف عمان کی بندرگاہ سے 4000 میٹرک ٹن ایل پی جی گیس سے بھرا ہوا بحری جہاز گوادر پورٹ کے ال قاسم ٹرمینل پر لنگر انداز ہوا، آل قاسم ٹرمینل سے یہ گیس ملک سے بذریعه روڈ بڑے ایل پی جی ٹینکروں کے ذریعے کراچی کوئٹه اور پاکستان کے دیگر شہروں میں سپلائی کی جائے گی۔ اس سے پاکستان میں ایل پی جی گیس کی کمی کو پورا کیا جا سکتا ہے۔
چیٸرمین گوادر پورٹ اتھارٹی نصیر احمد کاشانی اور چاٸنیز کونسل جنرل مسٹر لی اور چاٸنیز اورسیز پورٹ اولڈینگ کمپنی کےچیٸرمین زینگ باؤ ژونگ نے ال قاسم ایل پی جی گیس کےفلینگ اسٹیشن کا باقاعدہ سرخ ربن کاٹ کر افتتاع کی۔
جبکہ اس دوران ان تمام آفسران پر پورٹ کی جانب سے متواتر گل پاشی کی گئی۔

چیٸرمین پورٹ اتھارٹی نے حال حوال سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس اقدام سے گوادر پورٹ باقاعده فنکشنل ہوگا. اور میری کوشش ہے کہ بلوچستان اور خصوصاً گوادر کے عوام کو زیاده سے زیاده روزگار میسر ہو . اور آئنده بهی ایل پی جی گیس یہاں لائی جائے گی۔ اور ذخیره کی جائے گی. تاکہ پورٹ پر کام اسی رفتار سے چلے۔

اس سے پہلے گودر پورٹ پر ایک تقریب کا انعقاد ہوا جس میں چینی کونسل جنرل مسٹر لی نے آج کے اس بڑے ایونٹ کو سی پیک کی کامیابی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ گوادر مزید ترقی کرے اور اس سلسلے میں ایک ہزار سے زائد طلبہ کو چاٸنا میں تعلیم و تربیت کے لیے اسکالرشپ دی جائے گی۔

بجلی کی کمی کو پورا کرنے کے لیے ہم کول پاور پلانٹ سے 300 میگا واٹ بجلی کا کام شروع کر رہے ہیں جس سے بجلی کی کمی بھی پوری کی جائے گی۔ ایل پی جی گیس ٹرمینل کے اس بڑے منصوبے سے گیس کی کمی پوری کی جائے گی۔اور ہزاروں لوگ بر سر روزگار ہونگے۔

اس سے پہلے چاٸنیز کونسل جنرل مسٹر لی ,اورسیز پورٹ اولڈینگ کمپنی چیرمین زینگ باؤ ژونگ اور گوادر پورٹ کے چیرمین نصیر خان کاشانی نے تقریب سے خطاب بھی کیا کہ گیس کی پاکستان کو اشد ضرورت هے اور اس سلسلے میں یہاں گیس لانے کا مقصد کاروبار کو بڑھاوا دینا ہے. اس تقریب میں پاکستان کی بزنس کمیونٹی اور ریئل اسٹیٹ سے تعلق رکهنے والے تاجر اور دیگر سیول سوسائٹی سے تعلق رکهنے والے معتبرین کو بھی اس تقریب میں مدعوع کیا گیا تھا۔

پورٹ اتھارٹی کے چیٸرمین نصیر کاشانی نے کہا بزنس کمیونٹی کی گوادر آمد اور پھر یہاں سے کراچی کوئٹہ اور پاکستان کے دور دراز علاقوں سے ایل پی جی گیس بڑی گاڑیوں سے پہنچانے سے گوادر اور بلوچستان میں کاروبار میں مزید اضافه ہوگا اور لوگوں کی معاشی حالات میں بڑی تبدیلی آسکتی هے.

اس سلسلے میں گوادر کے بیروزگار نوجوانوں نے کہا هے کہ اگر پورٹ مکمل فنکشنل ہو جائے اور پورٹ کے چیٸرمین نصیر خان کے مطابق مقامی افراد کو روزگار کے بہتر مواقع حاصل هونگے. یہ بڑی خوش آئند خبر ہے.

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial