ننکانہ: پنجاب لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2021ءمیونسپل کمیٹیاں ختم ہونے سے نئے قائم شدہ یونٹس میں تاحال افسران تعینات نہ ہو سکے عوام کو شدید مشکلات

پنجاب حکومت نے محکمہ بلدیات کو تجربہ گاہ بنا رکھا ہے ہر تین ، چار ماہ بعد سسٹم تبدیل کردیتے ہیں جس کی نہ ہی افسران کو سمجھ آتی ہے اور نہ ہی عوام کو
ننکانہ صاحب سے شاہزیب گجرکی رپورٹ
پنجاب لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2021ءکے تحت نئے قائم ہونے والے یونٹس میں تاحال افسران کی تعیناتی مکمل نہ ہونے کی وجہ سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا، عوامی حلقوں کا سیکرٹری بلدیات اور وزیراعلیٰ پنجاب سے تمام بلدیاتی اداروںکو فوری طور پر فنگشنل کرنے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کی طرف سے پنجاب لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2021ءکے تحت میونسپل کمیٹیوں کو ختم کرکے سات یونٹس قائم کردئیے گئے ہیں جن میں ننکانہ یونٹ، شاہکوٹ یونٹ، سانگلہ ہل یونٹ، واربرٹن یونٹ، منڈی فیض آباد یونٹ، موڑکھنڈا یونٹ اور بچیکی یونٹ شامل ہیں مذکورہ یونٹس کو ڈسٹرکٹ کونسل کے ماتحت کردیا گیا ہے مگر مذکورہ یونٹس بھی نہ ہی ابھی تک متعلقہ افسران کی تعیناتی ہوسکی ہے اور نہ ہی ان کے شیڈول آف اسٹیبلشمنٹ فائنل ہوسکیں گے عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت نے محکمہ بلدیات کو تجربہ گاہ بنا رکھا ہے ہر تین ، چار ماہ بعد سسٹم تبدیل کردیتے ہیں جس کی نہ ہی افسران کو سمجھ آتی ہے اور نہ ہی عوام کو عوام اپنے مسائل کے حل کے لئے میونسپل کمیٹیز جو کہ اب یونٹس بن چکے ہیں کے دفاتر میں جاتے ہیں جہاں پر موجود عملہ یہ کہہ کر ٹرخا دیتا ہے کہ ان کے ابھی تک آرڈر نہیں ہوئے آپ ڈسٹرکٹ کونسل رابطہ کریں جبکہ ڈسٹرکٹ کونسل والے دوبارہ یونٹس میں واپس بھجوادیتے ہیں کہ یہ ان سے متعلقہ کام ہیں شہریوں نے سیکرٹری بلدیات اور وزیراعلیٰ پنجاب سے یونٹس کو مکمل طور پر فعال کرنے اور افسران کی تعیناتی کو یقینی بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial